تحریک انصاف کاایک اور رکن اسمبلی ساتھ چھوڑ گیا

تحریک انصاف سندھ میں ٹوٹ پھوٹ مزید واضح ہوگئی، سینیٹ الیکشن میں تین ارکان اسمبلی منحرف ہونے کا معاملہ ختم نہیں ہوا کہ ایک اور رکن اسمبلی نے ناراض ہوکر استعفیٰ دیدیا،قومی اسمبلی کی نشست این اے 249 سے ٹکٹ دینے کے تنازع پر پاکستان تحریک انصاف کے رکن سندھ اسمبلی ملک شہزاد اعوان نے استعفیٰ دیدیا۔

پی ٹی آئی کے رکن سندھ اسمبلی ملک شہزاد اعوان نے اپنا استعفی اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کو بھجوا دیا ہے۔ ملک شہزاد اعوان نے استعفیٰ این اے 249 سے امجد آفریدی کو ٹکٹ دینے پر دیا اور وہ سمجھتے ہیں پی ٹی آئی امیدوار امجد آفریدی حلقے میں غیر مقبول ہے، یہ سیٹ ہر حال میں جیت کر وزیراعظم کو تحفے میں دینی ہے اس لیے استعفیٰ دیا۔
دوسری جانب وزیر اطلاعات سندھ ناصر شاہ کے مطابق پی ڈی ایم میں مشترکہ امیدوار لانے پر اتفاق ہو گیا ہے، اس سے پہلے مسلم لیگ ن، پی پی اور جے یو آئی ف کے امیدوار کھڑے تھے،

Information minister of Sindh

واضح رہے کہ کراچی سے قومی اسمبلی کی نشست این اے 249 سے پی ٹی آئی کے فیصل واوڈا عام انتخابات میں کامیاب ہوئے تھے تاہم سینیٹر کا الیکشن جیتنے کے بعد فیصل واوڈا نے اس نشست سے استعفیٰ دیا۔
الیکشن کمیشن نے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 249 کا پولنگ شیڈول بھی جاری کر دیا ہے جس کے مطابق حلقے میں 29 اپریل کو ووٹنگ ہو گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں