اپوزیشن کا حکومت پر الزام…

کل گجرانوالہ میں اپوزیشن کا جلسہ کرنے جا رہی ہے جناح اسٹیڈیم میں جلسے کی اجازت نہ ملنے پر اپوزیشن نے جی ٹی روڈ پر جلسے کا اعلان کر دیا ہے۔
دوسری طرف اپوزیشن رہنماء کہنا ہے کہ حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہے انتظامیہ کے ذریعے کارکنوں ہراساں کیا جا رہا ہے , کنٹینر لگا کر سڑکیں بند کر گئی ہے کارکنوں کے گھروں پر چھاپے مارے جارہے ہیں، کل کچھ ایف آئی آر بھی سامنے آئیں جن میں اپوزیشن جماعتوں کے عہدیداروں کے خلاف کورونا وائرس کے ایس او پیز کی خلاف ورزی پر کچھ دفعات شامل ہیں ۔ وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد سے پرہس کانفرس کے دوران ایک صحافی کی جانب سے سوال کیا گیا کہ گزشتہ ہفتے ہونے والے تحریک انصاف کے جلسے میں بھی ایس او پیز کا خیال نہیں رکھا گیا جس کے جواب میں یاسمین راشد نے کہا سیف اللہ نیازی سے درخواست کی ہے کہ آئندہ اس قسم کا اجلاس نہ کریں ۔
وزیراعظم کہہ رہے ہیں کہ جلسہ کریں جلوس کریں پوری اجازت ہے مگر اپوزیشن کہہ رہی ہے کہ رکاوٹیں ڈالی جارہی ہیں ۔
اس حوالے سے فواد چودھری نے کہا ہے کہ ہم نے اپوزیشن کو آزادی دیے رکھی ہے کہ وہ جلسہ کریں اپوزیشن کو اصل ڈر یہ ہے کہ لوگ نہیں آئیں گے اس لیے وہ بیانیہ بنانے کی کوشش کررہے ہیں کہ حکومت کاروائی کرے گی , لیکن حکومت کوئی کاروائی نہیں کرے گی ہر کسی کو حق ہے وہ ائین و قانون کے دائرے میں رے کر اپنا اختجاج کرے۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں