پی ڈی ایم کامارچ نہ ہوسکا،شوبزانڈسٹری نےٹُک ٹُک مارچ شروع کردیا

سیاسی جماعتوں کی جانب سے پی ڈی ایم کالانگ مارچ تو نہ ہوسکا،شوبزانڈسٹری نےٹُک ٹُک مارچ شروع کردیا
پاکستانی شوبز انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے متعدد فنکاروں کو حال ہی میں ’ٹُک ٹُک مارچ‘ کے نام سے ہونے والی ایک تقریب میں شرکت کرتے دیکھا گیا۔
ٹُک ٹُک مارچ میں ماہرہ خان، ہمایوں سعید، بلال اشرف، ایچ ایس وائے، صنم سعید، فیروز خان، مایا علی اور عائشہ عمر سمیت پاکستانی شوبز انڈسٹری کے دیگر فنکاروں نے شرکت کی۔

ٹُک ٹُک مارچ ایک غیر سرکاری فلاحی ادارے (این جی او) کی جانب سے شروع کی گئی رکشہ سواری ہے جسے خاص طور پر معذور افراد کے لیے شروع کیا گیا ہے یعنی اس کے چلانے والے معذور افراد ہیں۔
پاکستانی فنکاروں کی اس تقریب میں شرکت کا مقصد بھی یہی ہے کہ معذور افراد بھی اس معاشرے کا حصہ ہیں، انہیں کمتر نہ سمجھا جائے اور ان کے ساتھ سفر کرتے ہوئے کسی قسم کا خوف محسوس نہ کیا جائے۔
تقریب میں شریک اداکار فیروز خان کا ایک معذور کیپٹن کے ساتھ رکشے پر سواری کرتے ہوئے کہنا تھا کہ میں بہت پرجوش اور بہت خوش ہوں کہ ہم ان جیسے لوگوں کے لیے کچھ کر رہے ہیں۔

actor feroz khan and actress mahira khan

فیروز خان نے کراچی کے شہریوں اور اپنے چاہنے والوں سے اپیل کی کہ وہ باہر نکلیں اور ان رکشہ ڈرائیورز پر بھروسہ کریں، ان کے ساتھ سفر کرتے ہوئے فکرمند نہ ہوں، مجھے امید ہے کہ آپ ان کے ساتھ اور یہ (رکشہ ڈرائیورز) آپ کے ساتھ خود کو محفوظ سمجھیں گے۔

پاکستانی اداکار کا ہالی وڈ سپر اسٹار کی مثال دیتے ہوئے کہنا تھا شاید ایک کمرشل بھی ہے جس میں جیمز بانڈ ٹُک ٹُک چلا رہا ہے، تو پھر ہم کیوں اسے چلانے میں شرم محسوس کریں۔

معذوری سے متعلق پوچھے گئے سوال پر اداکار فیروز خان کا کہنا تھا میری نظر میں کسی دوسرے کو قبول نہ کرنا معذوری ہوتی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں