افغانستان سے امریکی انخلاء مکمل ہونے کے بعد نئی کابینہ کا اعلان کل (بروز جمعہ) کریں گے۔

طالبان عہدیدار احمد اللہ متقی نے بتایا کہ سپریم لیڈر ہیبت اللہ اخونزادہ نئی افغان حکومت کے سربراہ ہوں گے جبکہ کابینہ کا اعلان بعد نماز جمعہ 03 ستمبر کو کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان میں ہم جس اسلامی حکومت کا ہم اعلان کریں گے وہ لوگوں کے لیے ایک نمونہ ہوگی۔

افغان میڈیا کے مطابق قطر میں طالبان کے سیاسی دفتر کے سربراہ شیر محمد عباس ستانکزئی کو امارات اسلامیہ افغانستان کا وزیر خارجہ نامزد کردیا گیا ہے۔

اس سے قبل گزشتہ روز شیر محمد عباس ستانکزئی نے اپنے ایک انٹرویو میں کہا تھا نئی حکومت کا اعلان دو روز میں مکمل کرلیا جائے گا جبکہ ہماری حکومت میں نئے چہرے شامل ہوں گے۔

دوسری جانب افغان طالبان ترجمان کا کہنا ہے کہ متوقع طور پر بروز جمعہ نئی افغان امارات اسلامیہ کا اعلان کردیا جائے گا جس میں کابینہ سمیت اہم سربراہان کے نام سامنے آجائینگے۔افغان طالبان کی رہبری شوریٰ اجلاس کے بعد ملا برادر قندھار سے کابل پہنچ چکے ہیں جنہیں رئیس شوریٰ کی ذمہ داری دیے جانے کا امکان ہے۔

ملا یعقوب کو وزیردفاع اور سراج الدین حقانی کو وزیرداخلہ بنائے جانے کا امکان ہے اور یہ دونوں طالب رہنما اس وقت طالبان سربراہ ملا ہیب اللہ کے نائب ہیں۔

یاد رہے کہ طالبان دعوت و رہنمائی کمیشن کے سربراہ مولوی امیر خان متقی کو وزارت خارجہ کا قلمدان دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ طالبان کے موجودہ ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کو عبوری حکومت کا وزیر اطلاعات بنائے جانے کا امکان ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں