وزیراعظم اب ٹائیگر فورس کے زریعے مہنگائی کو کنٹروم کرینگے

ملک بھر میں بڑھتی مہنگائی اس وقت حکومت کے لیے اپوزیشن سے بھی بڑا چیلینج۔
اس حوالے سے وزیراعظم نے ٹائیگر فورس کو ٹاسک دیا ہے کہ وہ اپنے علاقے میں کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتوں کو مونیٹر کریں۔ جون میں بھی وزیراعظم ٹائیگر فورس کو ٹاسک دیے چکے ہیں مگر کچھ نہ ہوا۔ اس حوالے سے ٹائیگر فورس نے کچھ علاقوں میں تاجروں کے خلاف ایکشن لیا جس کی وجہ سے تاجر برادری کا بھر پور احتجاخ سامنے آگیا۔ آل پاکستان انجمن تاجران کے صدر نے کہا کہ وزیراعظم کہتے ہیں کہ مہنگائی مافیہ نے کی ہے لیکن تاجر تو مافیہ نہیں ہے تاجر اس ملک کی ریڑھ کی ہڈی ہے۔ 80 فیصد ادھار کا مال لے کر تاجر دن بھر بیچتا ہے۔ ڈالر ہم نے مہنگا نہیں کیا ۔ چینی اور آٹے کا بحران ہم نہیں لے کر آئے ۔ ٹائیگر فورس مارکیٹ میں آئے تو سہی ہم انہیں جوتے ماریں گے۔
آخر کس قانون کے تحت ٹائیگر فورس کے نوجوانوں کو بدتمیزی کا سرٹیفکیٹ دیا گیا ہے کہ وہ تاجروں کے ساتھ بدتمیزی کریں۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں