انسداد دہشت گردی کیلئے پاکستان کو ہر ممکن تعاون فراہم کرینگے،روسی وزیرخارجہ

روس کے وزیرخارجہ سرگئی لاروف نے افغانستان میں بڑھتی دہشتگردی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان انسداد دہشت گردی کیلئے بڑا فعال کردار ادا کررہا ہے ،افغان مسئلہ کا حل مذاکرات سے ہی ممکن ہے ،روس، چین امریکہ اور پاکستان نے افغانستان کے معاملہ پر بات چیت کی۔وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے روسی وزیرخارجہ نے کہاکہ انسداد دہشت گردی کے شعبے میں پاکستان کو تعاون فراہم کریں گے،
انسداد دھشت گردی تعاون دونوں ممالک کے لئے اہم ہے،ہماری مشترکہ فوجی مشقیں بھی ہونے جارہی ہیں،ہم بین الاقوامی اداروں جیسے یو این میں تعاون جاری رکھیں گے،پاکستان شنگھائی تعاون تنظیم کا اہم رکن اور انسداد دہشت گردی سٹرکچر میں بہت فعال ہے،ہمیں افغانستان میں بڑھتی دہشت گردی پر تشویش ہورہی،افغانستان میں سیکیورٹی صورتحال خراب ہورہی ہے،ہم سمجھتے ہیں کہ سیاسی مزاکرات سے ہی افغانستان کا مسلہ حل ہوسکتا ہے،روس، چین امریکہ اور پاکستان نے افغانستان کے معاملہ پر بات چیت کی ہے،ہماری افریقہ اور مڈل ایسٹ کی سورتحال پر بات چیت بھی ہوئی ہے،یمن، لیبیا شام کی صورتحال پر تبادلہ خیال ہوا۔روسی وزیرخارجہ نے کہاکہ کورونا وائرس وبا کے باوجود ہمارے سیاسی تعلقات آگے بڑھ رہے ہیں،باہمی تجارت 790 ملین ڈالرز کو پہنچ گئی ہے اور اس میں چالیس فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا ہے،ہم سمجھتے ہیں باہمی تجارت میں مزید اضافے کی ضرورت ہے،ہم نے انرجی شعبے میں تعاون پر بھی بات کی جس میں نارتھ ساوتھ گیس پائپ لائن اہم ہے،ہمارا 2015کا ایک ایگریمنٹ ہے، اس پر مزید اتفاق رائے جیسے ہی ہوتا ہے ہم کام شروع کردیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں