چار سالہ پاکستانی بچی جس نے مائیکرو سوفٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل کا امتحان پاس کرکے ملک کا نام روشن کردیا

کراچی کی رہائشی عریش فاطمہ نے انتہائی کم عمری میں مائیکروسوفٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل کا اعزاز حاصل کرکے عالمی سطح پر پاکستان کا نام روشن کردیا۔

عریش فاطمہ نے محض چار سال کی عمر میں مائیکروسوفٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل (ایم سی پی) کے امتحان میں 831 نمبر لے کر یہ اعزاز حاصل کیا ہے۔ایم سی پی کے امتحان میں کامیابی کیلئے کم سے کم سکور 700 ہے جب کہ عریش فاطمہ نے انتہائی کم عمری میں امتحان میں 831 نمبر لے کر انوکھی تاریخ رقم کی ہے۔عریش فاطمہ کے والد اُسامہ پیشے سے خود بھی آئی ٹی کے ماہر ہیں اور وہ اپنی تمام تر صلاحیتیں بیٹی کو دینے کیلئے کوشاں ہیں۔

اسد عمرکی زیر صدارت این سی او سی کااجلاس آج ہوگا، اہم فیصلے متوقع
اسامہ کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کے دوران گھر سے کام کرنے کے دوران انہوں نے آئی ٹی میں عریش کی دلچسپی دیکھتے ہوئے امتحان دینے میں اس کی مدد کی۔انہوں نے بتایاکہ عریش انتہائی لائق اور غیر معمولی صلاحیتوں کی مالک ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں