کراچی میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کا سالوں پرانا مسئلہ حل ہونے کے قریب

وفاقی حکومت نے کے الیکٹرک کو اضافی بجلی کی فراہمی کیلئے 90 ارب روپے کے فنڈز کی منظوری دے دی، ذرائع کراچی میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کا سالوں پرانا مسئلہ حل ہونے کے قریب، وفاقی حکومت نے کے الیکٹرک کو اضافی بجلی کی فراہمی کیلئے 90 ارب روپے کے فنڈز کی منظوری دے دی۔ تفصیلات کے مطابق کراچی میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کا سالوں پرانا مسئلہ اب بہت جلد حل ہو جائے گا، کیونکہ وفاقی حکومت نے کراچی کے مسائل کو حل کرنے کے لیے اہم اقدامات اٹھانا شروع کر دیے ہیں، انہیں اقدامات میں کے الیکٹرک کو اضافی بجلی فراہم کرنے کے لیے 90 ارب روپے کے فنڈز کی پہلی قسط کی منظوری دینے کا فیصلہ بھی شامل ہے۔
ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت نے نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی لمیٹڈ (این ٹی ڈی سی) سے کے الیکٹرک کیلئے اضافی بجلی کی فراہمی کی منظوری دے دی۔
وزیرخزانہ شوکت ترین کی زیرصدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کا اجلاس ہوا جس میں 18 نکاتی ایجنڈا زیرغور آیا اور توانائی شعبے کیلئے دی گئی سبسڈی کا ازسرنوجائزہ لیا گیا۔ای سی سی نے نجی بجلی گھروں کو 90 ارب روپے کی پہلی قسط جاری کرنے کی منظوری دے دی ہے۔
نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) کو 1 ارب 80 کروڑ روپے جاری کرنے کی بھی منظوری دی گئی۔ذرائع کے مطابق این ڈی ایم اے اس رقم سے آکسیجن اور اس کی تیاری سے متعلقہ سامان درآمد کرے گا ۔ای سی سی اجلاس میں اسلام آباد ہائی کورٹ کی بلڈنگ کی تعمیر کے لیے 57 کروڑ روپے کی منظوری دی گئی جبکہ وزارت دفاع، پٹرولیم ڈویژن اور دیگر کے لیے تکنیکی ضمنی گرانٹ کی منظوری دی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق اجلاس میں فیڈرل ایجوکیشن اینڈ پروفیشنل ٹریننگ کے لیے 1 ارب 56 کروڑ روپے کی منظوری دی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں